May 26, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/protect-the-arctic.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

العربیہ اور اس کے برادر ٹی وی چینل الحدث کی ٹیم نے ایک خصوصی سفرمیں امریکی طیارہ بردار بحری جہاز آئزن ہاور کے کاک پٹ میں داخل ہوکر حوثیوں کے ٹھکانوں پر کی گئی کارروائیوں کی خصوصی فوٹیج حاصل کی ہے۔

اس طرح ’العربیہ‘ آئزن ہاور کے کاپ پٹ کے اندر کی سرگرمیوں کی کوریج کرنےوالا پہلا ٹی وی چینل بن گیا ہے۔

العربیہ کےنامہ نگار اور کیمرہ ٹیم امریکی جنگجوؤں کے ٹیک آف اور لینڈنگ کے ساتھ تھے جنہوں نے یمن میں حوثیوں کے ٹھکانوں پر روزانہ تقریباً 16 گھنٹے حملے کیے تھے۔

دونوں چینلز کے کیمروں نے بحرین میں امریکی اڈے سے ایک خصوصی سفر کی تفصیلات ریکارڈ کیں جہاں امریکی جوہری طیارہ بردار بحری جہاز “آئزن ہاور” باب المندب کے قریب لنگر انداز ہے۔ یہ حوثیوں کے تجارتی جہازوں پر حملوں کے خلاف یمنی ساحل کے قریب بحیرہ احمر میں تعینات کیا گیا ہے۔

ہیں، جسے ہمارے نامہ نگار لیث بازاری نے سمندر میں مشکل مشن کے حالات اور نوعیت کے بارے میں خصوصی خبروں کی ایک سیریز کے ذریعے دستاویز کیا ہے۔

العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ “اب ہم ایک امریکی فوجی طیارے پر سوار ہیں جو امریکی طیارہ بردار بحری جہاز آئزن ہاور کی طرف جا رہا ہے۔ جو آبنائے باب المندب کے علاقے میں 4 ماہ سے لنگر انداز ہے۔ پرواز میں تقریباً 4 گھنٹے لگیں گے۔ یقیناً ہمیں سمندر کے قریب بعض ہوائی اڈوں پر رکنا پڑتا ہے۔

العربیہ کے نامہ نگار نے پرواز کے حالات اور فوجی پروٹوکول کے بارے میں بتایا۔ اس نے کہا کہ”ہمیں ملٹری بریفنگ دی گئی جس کے دوران ہم سے کہا گیا کہ جہاز میں کم سے کم چیزیں اپنے ساتھ رکھیں کیونکہ کرسیاں بہت چھوٹی ہیں اور ہیلی کاپٹرمیں کوئی سینیٹری کی سہولیات نہیں ہیں۔ اس لیے ہمیں ضرور سوار ہونے سے پہلے باتھ روم جانا تھا۔ہمیں موٹے کپڑے پہننے کو کہا گیا جیسا کہ آپ دیکھ سکتے ہیں، کیونکہ پرواز کے دوران آسمان میں درجہ حرارت کم ہوتا ہے۔

العربیہ کے نامہ نگار نے کہا کہ “ہم یہاں طیارہ بردار بحری جہاز آئزن ہاور پر سوار ہیں جو خلیج عدن اور آبنائے باب المندب کے درمیان سفر کر رہا ہے۔ ہم یہاں کنٹرول ٹاور میں متعلقہ لوگوں یا بحری فوجیوں کو دیکھ رہے ہیں۔

اس نے کہا کہ “یقینا ہم طیاروں کی آمد کو دیکھ رہے ہیں۔ ان میں سے کچھ تیاری کر رہے ہیں، جیسا کہ ہم اپنے پیچھے دیکھ رہے ہیں۔ وہ طیارہ اس جہاز کے عرشے سے یا طیارہ بردار بحری جہاز سے اڑان بھرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ وہاں صرف طیارے ہیں۔

“آیزن ہاور” دنیا کے سب سے بڑے طیارہ بردار بحری جہازوں میں سے ایک ہے، جس میں تقریباً 5000 امریکی بحریہ کے اہلکار سوار ہیں اور یہ 65 سے زیادہ جنگی طیارے لے جا سکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *